Published On: Thu, Sep 12th, 2013

آئی سی سی میٹنگ: ڈی آر ایس سسٹم موضوع بحث ہوگا

ICC-logoدبئی: آئی سی سی کی چیف ایگزیکٹیوز میٹنگ میں ڈی آر ایس سسٹم موضوع بحث ہوگا، ایشز سیریز میں سامنے آنے والے ٹیکنالوجی کے نقائص کا جائزہ لیا جائیگا۔ سسٹم کی افادیت بڑھانے کیلیے مختلف تجاویز بھی زیر غور آئینگی۔ تفصیلات کے مطابق انگلینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان گذشتہ دنوں کھیلی جانے والی ایشز سیریز میں ڈی آر ایس کے کئی نقائص کھل کر سامنے آئے جس کی وجہ سے میچز پر تنازعات کے بادل چھائے رہے، دونوں ملکوں نے کونسل سے شکایت کی کہ ڈی آر ایس نے تاریخی ایشز سیریز کو ہائی جیک کرلیا، اگرچہ دونوں ہی سسٹم کے حامی مگر بہتری کے بھی خواہاں ہیں، اب اس تمام معاملے کا آئی سی سی چیف ایگزیکٹیوز میٹنگز میں جائزہ لیا جائے گا جو آئندہ پیر اور منگل کو دبئی میں ہونگی۔ ایجنڈے میں ڈی آر ایس کا معاملہ شامل اور ایشز میں ٹیکنالوجی کی سامنے آنیوالی خامیوں اور اسے مزید بہتر بنانے کا جائزہ لیا جائے گا، البتہ یہ یقینی طور پر نہیں کہا جاسکتا کہ برسبین میں 21 نومبر سے شروع ہونے والی جوابی ایشز سیریز سے قبل یہ عمل مکمل ہوجائیگا یا نہیں۔اس ریویو کا نقطہ آغاز اس بات پر ہوگا کہ براڈ کاسٹرز ٹیکنالوجی کو امپائرز کی معاونت کے بجائے تفریح کیلیے استعمال کررہے ہیں، تھرڈ امپائر کو براڈ کاسٹر کی جانب سے فراہم کی گئی فوٹیج پر انحصار کرنا پڑتا ہے۔ ایک تجویز یہ بھی ہے کہ اگر تھرڈ امپائر ایل بی ڈبلیو کے حوالے سے فیلڈ آفیشل کے حق میں فیصلہ دے تب پھر ٹیم کا ریویو ضائع نہیں ہونا چاہیے، مجموعی طور پر ٹیکنالوجی میں ایسی بہتری کے طریقہ کار پر غور کیا جائیگا جو سب کیلیے قابل قبول ہو۔ بھارت پہلے ہی ڈی آر ایس کیخلاف اور ایشز میں سامنے آنے والے تنازع کے بعد اپنے موقف کو درست قرار دے رہا ہے۔ انگلینڈ کے سابق کپتان اور موجودہ کمنٹیٹر مائیک ایتھرٹن نے تجویز دی کہ ڈی آر ایس سسٹم سے ہاٹ اسپاٹ کو ہی باہر کردینا چاہیے کیونکہ ایشز کے دوران ہی کپتانوں کا تھرمل کیمروں پر سے اعتبار اٹھ گیا تھا۔

About the Author

Leave a comment

XHTML: You can use these html tags: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>