Published On: Wed, Jul 17th, 2013

ناسا نے خلا میں چہل قدمی روک دی

130716211921_space_walker( بی بی سی نیو ز)

خلائی ادارے ناسا کے بین الااقوامی خلائی سٹیشن پر ایک خلا باز کے ہیلمٹ سے پانی خارج ہونے کے بعد خلا میں چہل قدمی روک دی گئ ہے۔
اطالوی خلا باز لوکا پارمیتانو کے ہیلمٹ سے پانی کا اخراج اتنا نقصان دہ تھا کہ وہ خلا میں چہل قدمی کے دوران قوتِ سماعت اور گویائی سے محروم ہو گئے تھے۔
جس کے بعد انھوں نے اپنے ساتھی خلا باز کریسٹوفر کیسیڈی سے واپس خلائی سٹیشن کے اندر پہچنے کے لیے مدد مانگی۔
کیسیڈی نے زمین پر موجود کنٹرولر کو بتایا کہ ’وہ کافی پریشان دکھائی دے رہے تھے لیکن اب صحیح ہیں۔‘
ہیلمٹ سے نکلنے والے پانی کی وجہ فوری طور پر معلوم نہیں ہو سکی ہے لیکن خیال کیا جا رہا ہے کہ پانی ہیلمٹ کے ’ ڈرنک بیگ‘ سے نکلا ہے۔
پارمیتانو کے ساتھیوں نے جھٹکے سے اُن کا ہیلمٹ اتارا تو اُس میں پانی بہت زیادہ تھا۔
ناسا خلا میں چہل قدمی کا دورانیہ شاذ ونادر ہی کم کرتا ہے لیکن ہیملٹ میں پانی آنے سے اطالوی خلا باز کے لیے سانس لینا دشوار ہو گیا تھا۔
پارمیتانو نے بتایا کہ اُنھیں اپنے سر کے پیچھے بہت سا پانی محسوس ہو رہا ہے۔ پہلے تو اُن کا خیال تھا کہ نمی پسینے کی وجہ سے محسوس ہو رہی ہے لیکن بعد میں پانی بڑھتا ہوا اُن کی آنکھ تک پہنچ گیا۔
اس مسئلے کی وجہ سے خلائی سٹیشن کی معمول کی دیکھ بھال اور تاروں کے نیٹ ورک کے لیے خلا میں چھ گھنٹے تک کی چہل قدمی کا منصوبہ ایک گھنٹے کے بعد ہی روکنا پڑا۔ ابتدائی اندازے کے مطابق تقریباً آدھا لیٹر پانی خارج ہوا ہے۔
لوکا پارمیتانو ایک ماہ قبل سپیس سٹیشن پر آئے تھے اور وہ پہلے اطالوی خلا باز ہیں جنہوں نے خلا میں چہل قدمی کی ہے۔

About the Author

Leave a comment

XHTML: You can use these html tags: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>