Published On: Mon, Jun 24th, 2013

دنیا میں’سپر مون‘ کا نظارہ

supermoon(بی بی سی)

دنیا کے کئی ممالک میں سنیچر کی رات کو آسمان پر ایک ایسا چاند نمودار ہو گا جو معمول سے بڑا اور زیادہ روشن ہو گا۔
’سپر مون‘ کہلانے والا یہ چاند زمین کے زیادہ قریب ہونے کی وجہ سے معمول سے چودہ فیصد زیادہ بڑا اور تیس فیصد زیادہ روشن ہو گا۔
جو لوگ اس بار سپر مون کے نظارے کو دیکھ نہیں پائیں گے انہیں آئندہ سال اگست تک انتظار کرنا پڑے گا۔
جس وقت دنیا کے مختلف حصوں میں سپر مون یا زیادہ روشن چاند زمین کے سب سے قریب ہوگا اس وقت چاند اور سورج کی کششِ ثقل کی وجہ سے پیدا ہونے والے مدو جزر سے سمندری لہریں معمول سے زیادہ بلند ہوں گی۔
ماہر فلکیات ہیتھر کوپر نے بی بی سی کے ریڈیو فور سے بات کرتے ہوئے کہا کہ’سپرمونز محض اتفاق ہوتے ہیں، چاند اپنے مدار میں گردش کرتا ہوا ہماری زمین کے نزدیک آ سکتا ہے، اور اگر اس وقت یہ پورا چاند ہو تو یہ بہت بڑا لگتا ہے‘۔
سکائی اینڈ ٹیلی سکوپ میں سپرمون کی فرضی داستان کے بارے میں لکھنے والی شیری بلوچی کے مطابق’سپر مون صرف ہماری آنکھوں کا دھوکہ ہے، ہو سکتا ہے کہ جب شام میں چاند طلوع ہو رہا تو اس وقت آپ کو دیکھنے میں معمول سے بڑا لگے لیکن حقیقی فرق اتنا نہیں ہو گا۔‘
ماہرین فلکیات نے سپرمون سے متعلق فرضی داستانوں کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ سپرمون کا زیادہ جرائم اور عجیب و غریب رویوں سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

About the Author

Leave a comment

XHTML: You can use these html tags: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>