Published On: Tue, Jun 25th, 2013

انٹرنیٹ کے لیے خلا میں نیا سیٹلائٹ نیٹ ورک

scienceدنیا بھر میں تین ارب افراد کو انٹرنیٹ کی بہتر سہولت فراہم کرنے کے لیے او تھری بی سیٹلائٹ نیٹ ورک کے چار سیٹلائٹ کو خلا میں بھیجا جا رہا ہے۔
پیر کو او تھری بی نیٹ ورک کے ان مصنوعی سیاروں کو خلا میں بھیجا جائے گا اور ان کی زمین سے بلندی تقریباً آٹھ ہزار کلومیٹر ہو گی۔
او تھری بی کا مطلب ہے ’ادر تھری بلین‘ یعنی مزید تین ارب، اس کا مطلب یہ ہے کہ مزید تین ارب افراد جنہیں ایک بہتر اور تیز رفتار انٹرنیٹ میسر نہیں ہے لیکن اب آنے والی دہائی میں انہیں بھی انٹرنیٹ کی جدید سروس میسر ہو گی۔
خلا میں او تھری بی نیٹ ورک کی زمین سے بلندی تقریبا آٹھ ہزار کلو میٹر ہو گی۔ زمین سے نسبتاً قریب ہونے کی وجہ سے انٹرنیٹ کی سپیڈ زیادہ ہو گی۔
او تھری بی سیٹلائٹ نیٹ ورک کے تحت چار سیٹلائٹ کرویرو فرنچ گیانا سے خلا میں بھیجے جائیں گے۔
چاروں سیٹلائٹ سویوز راکٹ کے ذریعے مقامی وقت کے مطابق 3:53 یعنی 6:53 جی ایم ٹی پر خلا میں بھیجے جائیں گے۔
جس کے بعد انہیں خلا میں اپنی مطلوبہ بلندی پر پہنچنے میں دو گھنٹے کا وقت درکار ہو گا۔
اس نئے سٹیلائٹ نیٹ ورک سے اُمید کی جا رہی ہے کہ لاکھوں افراد کو براڈ بینڈ جیسا انٹرنیٹ استعمال کرنے کا موقع ملے گا۔
توقع ہے کہ نئے سیٹلائٹ نظام سے آواز اور ڈیٹا کی ترسیل میں تاخیر کو کم کیا جا سکے گا۔
او تھری بی کے چیف ایگزیکٹو افسر سٹیو کولر کا کہنا ہے کہ نئے نیٹ ورک کو اس طریقے سے بنایا گیا ہے کہ یہ سیٹلائٹ رابطے میں پیدا ہونے والی تاخیر کو کم کر سکے۔
انھوں نے کہا کہ ’ہم سب جب سیٹلائٹ کالز کرتے ہیں تو اس میں چھ سو ملی سیکنڈ کا ڈیلے یعنی تاخیر ہوتی ہے جو کہ بہت زیادہ نہیں ہے لیکن یہ کنکشن کو استعمال نہ کرنے کے حوالے سے بہت ہے۔ یہ مسئلہ ڈیٹا نیٹ روک کا ہے۔اگر آپ انٹرنیٹ پر ہیں اور کوئی سائٹ تلاش کر رہے ہیں اگر تلاش کا یہ عمل سست ہے تو یہ انٹرنیٹ کے استعمال کے رویوں پر اثرانداز ہوتا ہے اور آپ سروس کا استعمال ترک کر دیتے ہیں۔ ہم ان مسائل کو حل کرنا چاہتے ہیں اور اس کا ایک ہی حل ہے کہ سیٹلائٹ کو زمین کے قریب بھیجا جائے‘۔
او تھری بی کے مطابق آواز کی واپسی یا روانڈ ٹرپ ٹرانسمیشن کا دورانیہ 6 سو ملی سکینڈ سے کم ہو کر لگ بھگ سو ملی سیکنڈ ہو جائے گا۔

About the Author

Leave a comment

XHTML: You can use these html tags: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>