Published On: Sat, Sep 7th, 2013

کراچی میں کارروائی ایک دو دن میں شروع ہوگی،چوہدری نثار

download (1)وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثارعلی خان نے کہا ہے کہ وفاقی کابینہ میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ کراچی میں دہشت گردوں، ٹارگٹ کلرز جرائم پیشہ افراد اور سیاسی جماعتوں کے مسلح ونگز کے خلاف فوری اور ٹارگیٹڈ کارروائی کی جائے اور یہ کارروائی سیاسی مصلحت سے پاک ہوگی ٹارگیٹڈ کارروائی رینجرز کرے گی اور پولیس اس کی معاونت کرے گی ڈی جی رینجرز آئی جی سندھ اور خفیہ اداروں کا روزانہ اجلاس ہوگا کراچی میں گورنر سندھ اور وزیراعلیٰ سندھ کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس میں کابینہ کے فیصلوں سے آگاہ کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ کارروائی ایک دو دن میں شروع ہوگی انہوں نے کہا کہ کابینہ میں ہونے والے کچھ فیصلے ایسے بھی ہیں جو حساس نوعیت کے ہیں جن کا اعلان نہیں کریں گے مگر ان پر عملدرآمد سامنے آئے گاانہوں نے کہا کہ ڈی جی رینجرز کے کچھ تحفظات دور ہو گئے ہیں اور جو جلد دور ہو جائیں گے وزیرداخلہ نے کا یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ زاہد حامد ،فروغ نسیم اور شہادت اعوان پر مشتمل کمیٹی قائم ہوگی جو قانونی مسائل حل کرے گی اس کے علاوہ معاملے کو روزانہ کی بنیاد پر دیکھنے کے لیے وزیراعلیٰ سندھ کی سربراہی میں کمیٹی بھی قائم ہوگی کمیٹی میں وزارت داخلہ ،وفاقی خفیہ ادارے اور نادرا کا نمائندہ شامل ہوگا انہو ںنے کہا کہ مسائل کا حل ڈھونڈنا ہے اور مسائل کا حل مشاورت اور اتفاق سے ہی ہوگا۔ اس بات پر سب نے اتفاق کیا ہے کہ جہاں جہاں بھی بھتہ خور اور جرائم پیشہ عناصر ہیں ان کے خلاف ٹارگیٹڈ کارروائی ہونی چاہیے چوہدری نثار نے واضح کیا کہ نہ آئی جی سندھ تبدیل ہوئے ہیں اور نہ ہی چیف سیکرٹری سندھ تبدیل ہوئے ہیں کابینہ کے اجلاس میں آئی جی سندھ کو پولیس کی استعداد کار بڑھانے کی ہدایت کی گئی ہے انہوں نے کہا کہ رینجرز کو کارروائی میں وفاقی اور صوبائی ایجنسیاں رپورٹ مہیا کریں گی جو پولیس اہلکار جرائم پیشہ اور دہشت گردوں کے ساتھی ہیں انہیں گرفتار اور برطرف کیا جائے گا انہو ںنے انکشاف کیا کہ اس وقت 40لاکھ سے زائد موبائل سمز غیر رجسٹرڈ ہیں جس کا اجلاس آج ہوگا، انہوں نے کہا کہ کراچی میں کارروائی سیاسی مصلحت سے پاک ہوگی یہ کمیٹی رینجرز کے قانونی تحفظات سے متعلق مسائل حل کرے گی وزیر داخلہ نے کہا کہ پیپلز پارٹی ایم کیو ایم اور تحریک انصاف سمیت ہر جماعت کے مینڈیٹ کا احترام کرتے ہیں۔ وزیراعظم نے گزشتہ دو دن کراچی میں بڑے مصروف گزارے ہیں کراچی کے مسئلے پر تمام اسٹیک ہولڈرز سے بات چیت بڑے خوشگوار ماحول میں ہوئی کراچی کے مسئلے کے حل کے لیے تمام فریقوں کے ساتھ مشاورت ہوئی اجلاس میں کراچی اور سندھ کے مسائل پر تفصیلی غور کیا گیا اس بات پر بطور خاص زور دیا گیا کہ کراچی میں بہتری کیلیے سیاسی نظریات سے بالاتر ہو کر فیصلے کرنا ہوں گے گزشتہ سالوں سے جو کچھ کراچی میں ہو رہا ہے وہ درست نہیں ۔ چودھری نثار نے کہا کہ تنقیدکرنے والے احساس کریں کہ سندھ کے حکمرانوں کے پاس سندھ کے عوام کامینڈیٹ ہے،سندھ حکومت،گورنراورایم کیوایم کوایک طرف کرکے کارروائی کی توسیاسی لڑائی شروع ہوجائے گی، واضح پیغام ملاہے کہ کراچی میں جرائم پیشہ افرادکے خلاف کارروائی ہونی چاہیے،کارروائی رینجرزکرے گی،پولیس معاونت کرے گی،دہشت گردوں،اغوابرائے تاوان،ٹارگٹ کلرزاورجرائم پیشہ افرادکے خلاف کارروائی ہوگی،زیر داخلہ نے کہا کہ وفاقی سول اور ملٹری انٹیلیجنس ایجنسیوں کے پاس سینکڑوں شرپسند عناصر کے نام ہیں جن کے خلاف رینجرز کی سربراہی میں ٹارگٹڈ آپریشن ہو گا۔جبکہ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ تمام جماعتوں نے اتفاق کیا ہے کہ کراچی میں فوج کی ضرورت نہیں ہے اور تمام کارروائی رینجرز کرے اور نتائج سامنے آئیں انہوں نے کہا کہ کراچی میں امن وامان پر وزیراعظم اور کابینہ سے کھل کر بات ہوئی ہے

About the Author

Leave a comment

XHTML: You can use these html tags: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>