Published On: Fri, Sep 13th, 2013

شام پر روس امریکہ مذاکرات کا دوسرا دن

international newsشام پہلے ہی کیمیائی ہتھیاروں کو بین الاقوامی کنٹرول میں دینے کی روسی تجویز پر رضامندی ظاہر کر چکا ہے
روسی وزیرِ خارجہ سرگئی لاوروف اور امریکی وزیرِ خارجہ جان کیری شام میں جاری کشیدگی کے حوالے سے جمعے کے روز بھی ملاقات کر رہے ہیں۔
یاد رہے کہ جمعرات کو شروع ہونے والے ان مذاکرات میں روسی وزیرِ خارجہ سرگئی لاوروف اور امریکی وزیرِ خارجہ جان کیری نے شام کے کیمیائی ہتھیاروں کو بین الاقوامی برادری کے کنٹرول میں دینے کے بارے میں جامع مذاکرات کیے تھے۔
اس بات کا بھی امکان ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان شام کے معاملے پر مذاکرات اختتامِ ہفتہ پر بھی جاری رہیں گے۔
جمعے کے روز ہونے والے مذاکرات میں اقوام متحدہ اور عرب لیگ کے مشترکہ ایلچی لخدار ابراہیمی کی شرکت بھی متوقع ہے۔
بی بی سی کے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ ایسا لگتا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان کئی امور پر اب بھی وسیع پیمانے پر اختلافات پائے جاتے ہیں۔
ملاقات سے پہلے جان کیری نے کہا تھا کہ دنیا دیکھ رہی کہ صدر بشارالاسد کیمیائی ہتھیاروں کو ترک کرنے کا اپنا وعدہ پورا کریں گے یا نہیں۔ انھوں نے کہا تھا کہ سفارت کاری کی ناکامی کی صورت میں طاقت کا استعمال لازی ہوگا۔
جمعرات کو جنیوا میں ہونے والی ملاقات سے پہلے ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں وزرائے خارجہ نے امید ظاہر کی تھی کہ روسی منصوبے پر عمل درآمد سے شام مغربی ممالک کی فوجی کارروائی سے بچ سکے گا۔
سرگئی لاوروف نے کہا تھا کہ کیمیائی ہتھیاروں کا معاملہ حل ہونے کے بعد شام کے خلاف امریکہ کی طرف سے فوجی کارروائی کی ضرورت نہیں رہے گی۔
جان کیری کا کہنا تھا کہ طاقت کے استعمال کی دھمکی کی وجہ سے شام اپنے کیمیائی ہتھیاروں کو بین الاقوام برادری کے حوالے کرنے پر تیار ہوا ہے اور انھوں نے امید ظاہر کی کہ سفارتکاری سے شام کے خلاف فوجی کارروائی سے بچا جا سکے گا۔

About the Author

Leave a comment

XHTML: You can use these html tags: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>