Published On: Mon, Aug 26th, 2013

ڈینگی کے تدارک کے لئے ایکشن پلان تیار ، ہر گھر کا معائنہ کیا جائے گا،وزیر محنت

mosquito_0لاہور وزیر محنت وانسانی وسائل راجہ اشفاق سرور نے کہا ہے کہ راوی ٹاؤن لاہور میں ڈینگی لاروا کے خاتمے کے لئے جامع منصوبہ بندی کی گئی ہے اور جنگی بنیادوں پر کام شروع کر دیا گیا ہے۔ انہوںنے کہا کہ راوی ٹاؤن میں 3 لاکھ 10 ہزار گھر ہیں اور نئے ایکشن پلان کے مطا بق راوی ٹاؤن کے ہر گھر ، ہر فیکٹری ، ہر سکول، ہر دکان اور تمام کھلے مقامات کا معائنہ کیا جائے گا اور اس مقصد کے لئے ارکانِ اسمبلی ، ٹی ایم اے، محکمہ صحت ، واسا،سالڈ ویسٹ مینجمنٹ ، محکمہ تعلیم ، این جی اوز اور تاجر تنظیموں کو متحرک کیا جائے گا ۔ آج سوشل سیکورٹی ہیڈآفس لاہور میں راوی ٹاؤن میں ڈینگی کے تدارک سے متعلق ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے صوبائی وزیر محنت وانسا نی وسائل راجہ اشفاق سرور نے کہا کہ نئے ایکشن پلان پر کامیابی سے عمل درآمد کے لئے راوی ٹاؤن کو 5 زون میں تقسیم کیا جا رہا ہے ۔ ہر زون کا نگران رکنِ قومی یا صوبائی اسمبلی ہو گا اور ہر زون میں مختلف محکموں کے 5 افسران ڈینگی کے تدارک اور گھر گھر معائنے کی نگرانی کریں گے ۔ اجلاس میں رکن صوبائی اسمبلی غزالی بٹ، سیکرٹری محنت وانسانی وسائل کیپٹن (ر) محمد یوسف ، ایڈیشنل سیکرٹری محنت اسفند یار خان، وائس کمشنر پنجاب سوشل سکیورٹی شاہد عادل، ڈائریکٹر جنرل محنت ، ڈائریکٹر ایجوکیشن ورکرز ویلفیئر بورڈ، ایڈمنسٹر یٹر لاری اڈہ، ٹی ایم او راوی ٹاؤن ، ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ، واسا، سالڈ ویسٹ مینجمنٹ اور پولیس سمیت تمام متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی ۔وزیر محنت راجہ اشفاق سرور نے بتایا کہ راوی ٹاؤن ڈینگی سے متاثرہ ٹاؤن میں سب سے زیادہ اہمیت کا حامل ہے اور یہاں سے اب تک ڈینگی سے متاثرہ 7 مریضوں کی نشاندہی ہو چکی ہے ۔ انہوںنے بتایا کہ راوی ٹاؤن میں لاری اڈہ ، سبزی منڈی ، ٹائر مارکیٹ، گودام ، اندرون شہر کی مارکٹیں اور کھلے علاقے ڈینگی کی افزائش کے لئے ساز گار مقامات ثابت ہو سکتے ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ محکمہ محنت کو راوی ٹاؤن میں ڈینگی لاروا کی تشخیص اور تدارک کا اہم فریضہ سونپا گیا ہے ۔ جس سے عہدہ برا ہونے کے لئے محکمہ محنت ، سوشل سیکورٹی اور ورکرز ویلفیئر بورڈ کے افسران پوری طرح تیار ہیں ۔ انہوںنے بتایا کہ محکمہ محنت اب تک ڈینگی کے بارے میں 824 سیمینارز اور ورکشاپس ،ڈاکٹرز کی تربیت کے لئے 264 ٹریننگ پروگرام ، 116 آگاہی واکس اور 1752 فری میدیکل کیمپس کا اہتمام کر چکا ہے جبکہ لوگوں میں 3 ہزار سے زائد سی ڈیز اور 42ہزار پمفلٹس تقسیم کئے جاچکے ہیں ۔ اسی طرح لیبر کالونیوں کی 49، ورکرز ویلفیئر سکولوں کی 75 اور سوشل سیکورٹی ہسپتالوں کی 41 انسپکشن بھی کی جا چکی ہیں ۔ وزیر محنت نے بتایا کہ راوی ٹاؤن میں عوامی نمائندوں ، مقامی افراد اور تاجر تنظیموں کی معاونت سے جس گھر اور فیکٹری کا معائنہ کیا جائے گا اُس گھر اور فیکٹری کے باہر سرکاری طور پر ایک پوسٹر بھی چسپاں کیا جائے گا جو اس امر کی نشاندہی کرے گا کہ متعلقہ گھر یا فیکٹری ڈینگی فری ہے ۔ انہوںنے بتایا کہ جس گھر یا فیکٹری میں ڈینگی لاروے کی موجودگی کا خطرہ ہو گا اُس گھر یا فیکٹری کی اُس وقت تک مسلسل نگرانی کی جائے گی جب تک اُسے ڈینگی فری قرار نہیں دیا جا تا۔#

About the Author

Leave a comment

XHTML: You can use these html tags: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>